Bayans
Naat
Sheets
Store
Live


کھانے کی سنتیں
9th April, 2021

Click for English
Download Audio

Comments

09-04-21

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم

نحمدہ و نصلی علیٰ رسولہ الکریم

نبی کریم ﷺ ایسے لوگوں کا لحاظ فرماتے ہوئے بلا تکلف تھوڑا تھوڑا کھاتے ہی رہتے اور سب سے آخر میں آپؐ ہی اٹھتے۔ مشکوٰۃ ، ابن ماجہ ، بیہقی

The Blessed Prophet sallallahu alayhi wa sallam would give consideration to the people (who ate slowly) and would accompany them by eating (slowly) in small amounts and would be the last to get up (from eating). Mishkaat, Ibn Majah & Bayhaqi

کھانا کھانے وقت نظر سامنے رہنی چاہیے، کوئی کسی کے لقمے پر نظر نہ اٹھائے یہ عادت نہایت نا پسند اور قابل نفرت ہے۔

When eating, a person should keep the gaze to the front (i.e. concentrate on eating his own food in front of him) and should not stare at how people are eating their morsels of food. This is a detestable and abhorrent habit.

بعض اوقات کھانا کھاتے ہوئے ناک میں پانی اتر آتا ہے اسے بار بار اوپر مت کریں بلکہ الگ ہو کر صاف کر لی جیے تاکہ ساتھ بیٹھنے والوں کو کراہت نہ آئے۔

Sometimes during a meal, a person may develop a runny nose, in that case do not keep wiping your nose with your hand, in fact take leave and clean/wipe the nose away from the gathering so that it does not cause any revulsion to those present.

صحت اور تندرستی کا تقاضا ہے کہ کھانا کم کھایا جائے، زیادہ کھانا انسان کو بوجھل اور سست بناتا ہے۔ آپ نبی ﷺ کا ارشاد ہے کہ زاید کھا پی کر دل کو مردہ نہ کرو اس لیے کہ دل مردہ ہو جاتا ہےجیسا کہ کھیتی جب کہ اس پر پانی کا غلبہ ہو جائے۔

Good health and wellness requires one to eat less. Eating too much can cause a person to become heavy and lazy. It is the saying of the Prophet sallallahu alayhi wa sallam that do not make the heart dead by eating and drinking too much, because the heart dies in this manner just as the farmland dies when overwhelmed (flooded/waterlogged) with water.

آپ ﷺ کا ارشاد: کوئی برتن بھرنے کے اعتبار پیٹ سے زیادہ برا نہیں ہے۔ ترمذی و نسائی

It is a saying of the Prophet sallallahu alayhi wa sallam: ‘The worst vessel to fill up is the stomach.’ (Tirmidhi & Nasai)

نبی کریم ﷺ کا ارشاد ہے کہ کم کھانے والے آدمی پر حق تعالٰی کو فخر ہے۔ اس فخر کا اظہار وہ فرشتوں سے ان الفاظ میں کرتے ہیں کہ دیکھو اس مرد حق کو کہ میں نے اسے خوش خورد نوش میں مبتلا کیا یعنی اچھے کھانے اور اچھے پینے میں مبتلا کیا ، اس نے میری خاطر کو ترجیح دی بس اے میرے فرشتو تم گواہ رہو کہ وہ جتنے لقمے کم کھاتا ہے میں اس کے لیے جنت میں اتنے ہی درجات کا اضافہ کروں گا۔ کیمیائے سعادت

It is the saying of the Blessed Prophet sallallahu alayhi wa sallam that Allah is proud of the person who eats less. And He expresses this pride to the angels in the following words: ‘Look at my rightful servant, whom I have engaged in good eating and good drinking for he has given priority to My will (over his own desires). O My angels, be witness that the number of morsels that eats less, will be number of times I will multiply his status (reward) in Jannah.’ (Keemya-e-Sa’aadat)

اللہ سبحانہ و تعالٰی ہمیں نبی پاک ﷺ کی تمام پیاری پیاری سنتوں پہ عمل کرنے کی توفیق نصیب فرمائے۔ آمین

I pray to Allah subhana wa ta’ala to grant us the taufeeq to have amal upon all the beautiful Sunnahs of the Blessed Prophet sallallahu alayhi wa sallam. Ameen.
9th Apr, 2021
margin-right:-5px